پی ایم انڈیا

بیٹی بچاؤ ،بیٹی پڑھاؤ: بچیوں کی نگہداشت

ہمارا اصول ہونا چاہئے: ’بیٹا بیٹی، ایک سمان‘

آئیے ہم بچی کی پیدائش کا جشن منائیں، ہمیں اپنی بیٹیوں پر بھی یکساں فخر ہونا چاہئے۔ میں آپ سے گزارش کرتا ہوں کہ آپ بیٹی پیدا ہونے پر اس موقع کو بطور جشن منانے کیلئے پانچ پودے لگائیں۔‘‘ وزیراعظم نریندر مودی اپنے ذریعے گود لیے گئے گاؤں جئے پور میں شہریوں سے خطاب کے دوران۔

بیٹی بچاؤ بیٹی پڑھاؤ (بی بی بی پی) کا آغاز وزیراعظم کے ذریعے 22 جنوری 2015 کو پانی پت، ہریانہ میں کیا گیا تھا۔ بی بی بی پی گھٹتے ہوئے بچوں کے صنفی تناسب اور ایک عرصہ حیات میں تمام متعلقہ خواتین کو بااختیار بنانے کے موضوعات کے مسئلے پر توجہ مرکوز کرتا ہے۔ یہ ایک سہ وزارتی کوشش ہے جس میں خواتین او ر بچوں کی ترقیات، صحت و کنبہ بہبود اور انسانی وسائل کی ترقیات کی وزارت شامل ہیں۔

اس اسکیم کے تحت پہلے مرحلے میں پی سی اور پی این ڈی ٹی ایکٹ کو ملک بھر میں بیداری پھیلانے کیلئے نافذ کرنا اور 100 اضلاع (جو سی ایس آر کے معاملے میں پیچھے ہیں) میں مہمات اور کثیر شعبہ جاتی کارروائیوں کے ذریعے بیداری پھیلانے کے عناصر شامل ہیں۔ تربیت ، لوگوں کو حساس بناکر ، بیداری میں اضافہ کرکے اور پورے معاشرے کو بنیادی سطح پر اس عمل میں شامل کرکے لوگوں کے انداز فکر کو بدلنے پر مضبوطی سے زور دیا گیا ہے۔

این ڈی اے حکومت ہمارے معاشرے کے ذریعے بچیوں کے بارے میں رائج انداز فکر کو یکسر تبدیلی کے عمل سے گزارنے کی کوشش کررہی ہے۔ وزیراعظم مودی نے اپنے من کی بات میں ہریانہ کے بلاس پور کے سر پنچ کی ستائش کی ہے جنہوں نے ’بیٹی کے ساتھ ایک سیلفی‘ کی پہل قدمی کی ہے۔ وزیراعظم نے لوگوں سے یہ بھی کہا ہے کہ وہ اپنی سیلفیوں کو اپنی بیٹیوں کے ساتھ شیئر کریں اور ان کی یہ بات جلد ہی دنیا بھر میں مقبول عام ہوگئی۔ پورے بھارت اور پوری دنیا سے لوگوں نے اپنی بیٹیوں کی سیلفیاں شیئر کرنی شروع کردیں اور یہ ان لوگوں کیلئے ایک فخر کا موقع بن گیا جن کے یہاں بیٹیاں ہیں۔

0.13648200-1451573004-empowering-girl-child

Since the launch of Beti Bachao Beti Padhao , the multi-sectoral District Action Plans have been operationalized in almost all states. Capacity-buiding programmes and Trainings have been imparted to Trainers to further strengthen capacities of district level officials and frontline workers. Nine set of such trainings have been organized covering all States/UTs the Ministry of Women & Child Development from April-October, 2015.

Some Local Initiatives

0.00072000-1451573123-betibachao-2

Under Beti Bachao Beti Padhao Scheme, Pithoragarh district has taken various steps towards protecting the girl child and enabling her education. The District Task Force and Block Task Force have been constituted. Meetings of these forums have organized & clear road maps have been developed and relating to Child Sex Ratio. To reach out the community at a large, awareness generation activities have been being carried out for wider dissemination of the Scheme. Various Rallies have been organized with core participation from various schools, Army schools, Employees of Government Departments, etc

In order to increase awareness about Beti Bachao Beti Padhao, street plays are also being organized in Pithoragarh. These street plays are not only organized at the villages, but also in markets to generate awareness among a larger audience. Through story visualization, people are getting sensitized towards the problems of sex-selective abortion. Issues related to the girl child and the series of the difficulties she faces through her lifespan are very well portrayed through these street plays. Through a Signature Campaign, Pledge and Oath Ceremony, message of BBBP has reached out to 700 students from PG colleges and several Army Personnel.

Mansa district in Punjab has launched an initiative to inspire its girls to be educated. Under its ‘Udaan – Sapneya Di Duniya De Rubaru (Udaan- Live your Dream For One Day)’ scheme, the Mansa administration invites proposals from girls belonging to classes VI-XII. These girls have the opportunity to spend one day with a professional they aspire to be — doctor, police official, engineer, IAS and PPS officers, among others.

The initiative has received great response, and more than 70 students have already got a chance to spend one day with a professional, to see them function in a professional environment, helping them make better decisions about their future career choice.

Loading...